05 Apr, 2020 | 11 Shaban, 1441 AH

Question #: 2561

February 13, 2020

Assalamu alaikum wr wb Mere ghar mei mere pas 9 cats hain kya mai inme se kuch ko sell kar sakti hu? Agr main inhe sell kar sakti hu tou kya unse aaye hue paise ko apne istemal mei bhi le skti hu? Aur agar apne istemal mei nahi le sakti tou kya us paise ko apni cats par laga skti hu kyun ki inka mahine ka kharcha kam se kam 3000 se 4000 rupay tak ka hota hai isliye?

Answer #: 2561

السلام علیکم ورحمۃ اللہ وبرکاتہ! میرے گھرمیں میرے پاس 9 بلیاں ہیں کیا میں ان میں کچھ بیچ سکتی ہوں؟ اگر میں انہیں بیچ سکتی ہوں تو کیا ان سے آئے پیسے کو اپنےاستعمال میں بھی لے سکتی ہوں؟ اور اگر اپنے استعمال میں نہیں لا سکتی تو کیا اس پیسے کو اپنی بلی پر لگا سکتی ہوں؟ کیوں کہ اس کا مہینے کا خرچہ کم از کم 3000 سے 4000 روپے تک کا ہوتا  ہے ۔

الجواب حامدا ومصلیا

بلی کی خرید و فروخت جائز ہے، اور اس کی رقم جہاں چاہیں  خرچ کرسکتے ہیں۔

الدر المختار وحاشية ابن عابدين (رد المحتار) (5/ 68):
’’
لكن في الخانية: بيع الكلب المعلم عندنا جائز، وكذا السنور، وسباع الوحش والطير جائز معلماً أو غير معلم‘‘.

والله اعلم بالصواب

احقرمحمد ابوبکر صدیق  غَفَرَاللّٰہُ لَہٗ

دارالافتاء ، معہد الفقیر الاسلامی، جھنگ

‏27‏ جمادى الثانی‏، 1441ھ

‏22‏ فروری‏، 2020ء