22 Oct, 2018 | 11 Safar, 1440 AH

Mehram r namerhrum rishty kon kon sy hn

الجواب حامدا و مصلیا

جس شخص کے ساتھ عورت کا نکاح ہمیشہ کے لئے حرام ہو وہ ’’محرَم‘‘ کہلاتا ہے، اور جس سے کسی وقت نکاح جائز ہوسکتا ہے وہ عورت کے لئے ’’نامحرَم‘‘  ہے، اور شرعاً نامحرَم سے پردہ ہے، جیسے دیور، خالہ زاد، چچازاد  وغیرہ ۔

تبيين الحقائق (6/ 19)

والمحرم من لا يحل له نكاحها على التأبيد بنسب أو سبب كالرضاع والمصاهرة , وإن كان بزنا.

والله اعلم بالصواب

احقرمحمد ابوبکر صدیق  غفراللہ لہ

دارالافتاء ، معہد الفقیر الاسلامی، جھنگ

‏08‏ محرّم‏، 1440ھ

‏19‏ ستمبر‏، 2018ء