24 Sep, 2018 | 13 Muharram, 1440 AH

agr larka or larki aqil or baligh hn r donun ek doasry ko pasand krty hn r larky k ghr wly razamnd hn r lrky abhi prh rha hai r wo lrki sy nikkah krna chahta hai r uska mqsd us lrki k sth islam k mutabiq zindgi guzarny ka hai ... jb k lrki k ghr ka mahool liberal qsm ka hai r lrki ka baap lrky k baap ko ziada psnd ni krta... aise mn kia hukm hai k lrka lrki kia krn .. wo ek dosry ko nikkah ki niyat sy chahty hn r behad psnd krty hn.. kindly jwab dn

الجواب حامدا ومصليا

والدین سے چھپ کر نکاح کرنا  بہت ہی بری بات ہے، اسلام اس کو پسند  نہیں کرتا۔لہذا  والدین کی رضامندی سے نکاح کرنا چاہیے،  اور اس طرح خفیہ نکاح میں اکثر دھوکہ ہوتا ہے، پھر خفیہ  نکاح میں  شرائطِ  نکاح کا لحاظ بہت کم ہی رکھا جاتا ہے،  جس کی وجہ سے عام طور پراس طرح کا  نکاح  شرعاً منعقد ہی نہیں  ہوتا۔

باقی جب تک  والدین کی رضامندی سے نکاح نہیں  ہوتا ، اس وقت تک آپس میں بات چیت کرنا اور تعلقات رکھنا گناہ ہے۔ اس سے بچنا ضروری ہے۔

والله اعلم بالصواب

احقرمحمد ابوبکر صدیق  غفراللہ لہ

دارالافتاء ، معہد الفقیر الاسلامی، جھنگ

۱۸؍ شوال المکرم ؍ ۱۴۳۹ھ

۳ ؍ جولائی  ؍ ۲۰۱۸ء