15 Nov, 2018 | 6 Rabiul Awal, 1440 AH

Question #: 2296

October 05, 2018

Assalamualikum Suna hai ke ibadat se phelay jitni zada niyatain karain ge utna zada sawab milay ga. Kaya se baat theek hai? Agar lambi lambi niyat kiay bahair tasbhi ya koi kaam kar lein tou kaya us ka bhi wohi sawab milay ga?

Answer #: 2296

الجواب حامدا و مصلیا

اعمال میں کئی نیتیں کر کے زیادہ ثواب حاصل کیا جا سکتاہے، البتہ کسی عمل  مثلاً تسبیح وغیرہ میں زیادہ نیتیں نہ بھی کی ہوں تو اس عمل کا جو بنیادی ثواب ہےوہ انشاءاللہ ضرور ملے گا، البتہ زائد نیتیں نہ کرنے کی وجہ سے اضافی ثواب نہیں ملے گا

عمدة القاري شرح صحيح البخاري -  (1/ 79)

وذهب أبو حنيفة وأبو يوسف ومحمد وزفر والثوري والأوزاعي والحسن بن حي ومالك في رواية إلى أن الوضوء لا يحتاج إلى نية وكذلك الغسل ..... ثم نقول أن الحديث عام مخصوص فإن أداء الدين ورد الودائع والأذان والتلاوة والأذكار وهداية الطريق وإماطة الأذى عبادات كلها تصح بلا نية إجماعا.

والله اعلم بالصواب

احقرمحمد ابوبکر صدیق  غفراللہ لہ

دارالافتاء ، معہد الفقیر الاسلامی، جھنگ

‏07‏ صفر‏، 1440ھ

‏18‏ اکتوبر‏، 2018ء