22 Aug, 2018 | 10 Zulhijjah, 1439 AH

As Salaam o Alaikum Hazrat miyan biwi ne Ramzan me rozay ki halat me yani dono rozay se tay, jama karli. Ab ye dono roza ki kafara or qaza ada karenge. Ya sirf qaza ada karenge. Jazak Allah

الجواب حامدا ومصلیا

            صورت مسئولہ میں میاں بیوی دونوں پر روزہ کی قضا اور کفارہ دونوں واجب ہیں اورکفارہ کے مسائل مندرجہ ذیل ہیں:

            ۱ ۔۔۔ ۔جو شخص روزے رکھنے کی طاقت رکھتا ہو اس کے لئے روزہ توڑنے کا کفارہ مسلسل دو مہینے کے روزے رکھنا ہے، اگر درمیان میں ایک روزہ بھی چھوٹ گیا تو دوبارہ نئے سرے سے شروع کرے۔

            ۲۔۔۔ ۔اگر چاند کے مہینے کی پہلی تاریخ سے روزے شروع کئے تھے تو چاند کے حساب سے دو مہینے کے روزے رکھے، خواہ یہ مہینے ۲۹، ۲۹ کے ہوں یا ۳۰، ۳۰  ، یا ۲۹، ۳۰ کے، لیکن اگر درمیان مہینے سے شروع کیے تو ساٹھ دن پورے کرنے ضروری ہیں۔

            ۳۔۔۔ ۔ جو شخص روزے رکھنے پر قادر نہ ہو وہ ساٹھ مسکینوں کو دو وقت کا کھانا کھلائے یا  ساٹھ  مسکینوں میں سے ہر مسکین کو صدقہٴ فطر کی مقدار کا غلہ یا اس کی قیمت دے دے۔ایک صدقہ فطر کی مقدار  نصف صاع (پونے دو کلو ) گندم یا اس کی قیمت  ہے۔ ایک مسکین کو ساٹھ دن صدقہ فطر  کے برابر غلہ وغیرہ دیتا رہے یا ایک ہی دن ساٹھ مسکینوں میں سے ہر ایک کو صدقہ فطر کی مقدار دےدے ،  دونوں جائز ہیں۔

الدر المختار مع رد المحتار -  (2/ 409)

(وإن جامع) المكلف آدميا مشتهى (في رمضان أداء) لما مر (أو جامع) أو توارت الحشفة (في أحد السبيلين) أنزل أو لا قضى) في الصور كلها (وكفر) (ككفارة المظاهر) الثابتة بالكتاب مرتبط بقوله وكفر أي مثلها في الترتيب فيعتق أولا فإن لم يجد صام شهرين متتابعين فإن لم يستطع أطعم ستين مسكينا لحديث الأعرابي المعروف في الكتب الستة فلو أفطر ولو لعذر استأنف إلا لعذر الحيض وكفارة القتل يشترط في صومها التتابع أيضا وهكذا كل كفارة شرع فيها العتق .

الهداية - (2/ 19)

 وكفارة الظهار عتق رقبة، فمن لم يجد فصيام شهرين متتابعين، فإن لم يستطع فإطعام ستين مسكينا؛ للنص الوارد فيه، فإنه يفيد الكفارة على هذا الترتيب. قال: وكل ذلك قبل المسيس، وهذا في الإعتاق والصوم ظاهر للتنصيص عليه، وكذا في الإطعام، لأن الكفارة فيه منهية للحرمة فلا بد من تقديمها على الوطء ليكون الوطء حلالا. ليكون الوطء حلالا.

والله اعلم بالصواب

احقرمحمد ابوبکر صدیق  غفراللہ لہ

دارالافتاء ، معہد الفقیر الاسلامی، جھنگ

۱۷؍ ذوالقعدہ ؍ ۱۴۳۹ھ

31 ؍ جولائی؍ 2018ء